شمالی کوریا مصنوعی سیارہ داغنے میں ناکام، حکومتِ جاپان مسلسل چوکنّا

حکومتِ جاپان، شمالی کوریا کی جانب سے مصنوعی سیارہ داغنے کے امکان پر مسلسل چوکنّا رہے گی۔

شمالی کوریا نے کہا ہے کہ پیر کے روز فوجی جاسوس مصنوعی سیارہ داغنے کی اُس کی تازہ ترین کوشش اُس وقت ناکام ہو گئی جب مصنوعی سیارہ لے جانے والا راکٹ پرواز کے پہلے مرحلے کے دوران پھٹ گیا۔

جاپانی کابینہ کے چیف سیکریٹری ہایاشی یوشی ماسا نے داغے جانے کی مذمت کی ہے۔ اُنہوں نے کہا، "شمالی کوریا کے اقدامات کا سلسلہ، جس میں بار بار میزائل داغنا بھی شامل ہے، ہمارے ملک، خطّے اور بین الاقوامی برادری کے امن و سلامتی کے لیے خطرہ ہے"۔

اُن کا کہنا تھا کہ مصنوعی سیارے کا داغا جانا اقوامِ متحدہ کی سلامتی کونسل کی متعلقہ قراردادوں کی خلاف ورزی ہے اور یہ ایک سنگین مسئلہ ہے جس کا تعلق جاپانی عوام کے تحفظ سے ہے۔

جاپانی حکومت مزید اشتعال انگیزیوں کیلئے تیار رہنے کی غرض سے اقدامات کرنا جاری رکھنے کا ارادہ رکھتی ہے۔ اِن اقدامات میں اوکیناوا پریفیکچر کے ساکی شِیما جزائر میں PAC-3 انٹرسیپٹر میزائل یونٹس کی مسلسل تعیناتی شامل ہے۔