دل کی بیماری میں مبتلا بچوں کے لیے لچکدار پیچ جاپان میں دستیاب

ایک جاپانی یونیورسٹی اور ٹیکسٹائل بنانے والوں نے دل کی پیدائشی بیماری میں مبتلا بچوں کے لیے مشترکہ طور پر ایک ایسا کارڈیک پیچ تیار کیا ہے جو پھیل سکتا ہے۔ نئی پراڈکٹس جون سے جاپان کے طبی اداروں میں دستیاب ہوں گی۔

جن بچوں کے دلوں اور دل کی خون کی نالیوں کے سوراخوں کو پیچ کے ساتھ بند کرنے کے لیے سرجری کی جاتی ہے، انہیں آپریشن کرانا پڑتا ہے تاکہ ان کے جسم کی افزائش کے ساتھ ان کے دل میں نئے پیچ لگائے جا سکیں۔

نیا پیچ بچوں کی نشوونما کے مطابق پھیل جاتا ہے، جس سے متبادل سرجری کی ضرورت ختم ہو جاتی ہے۔

اس پیچ سے مریض بچوں کی تکلیف کو نمایاں طور پر کم کرنے کی امید ہے۔

اسے اوساکا میڈیکل اینڈ فارماسیوٹیکل یونیورسٹی نے اوساکا اور فُکُوئی پریفیکچرز میں ٹیکسٹائل بنانے والوں کے ساتھ مل کر تیار کیا ہے۔

یونیورسٹی کے پروفیسر نےموتو شِنتارو نے پیر کو ٹوکیو میں صحافیوں سے بات کی۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ اس سے بچوں کی متبادل سرجری کی ضرورت ختم ہو جائے گی اور عالمی مارکیٹ میں ایک مسابقتی پراڈکٹ دستیاب ہو گی۔

سنتھیٹک ریزن اور دیگر مواد سے بنے روایتی پیچ میں کوئی لچک نہیں ہوتی ہے۔ بچوں کو اپنی پچھلی سرجری کے زیادہ سے زیادہ دو سال بعد متبادل سرجری کروانے کی ضرورت پیش آتی ہے۔

نیا پیچ جالی دار دھاگوں سے بنایا گیا ہے جس سے یہ تقریباً دو گنا بڑا ہو سکتا ہے، اور اسے جسمانی بافتوں میں ضم کیا جا سکتا ہے، جس سے متبادل سرجری اصولی طور پر غیر ضروری ہو جاتی ہے۔