گوگل اے آئی سرچ فیچر غلط معلومات دیتا ہے: امریکی ذرائع ابلاغ

امریکہ کے بعض ذرائع ابلاغ کے مطابق، بتایا جاتا ہے کہ گوگل کے تخلیق کردہ ایک مصنوعی ذہانت سرچ فیچر نے سوالات کے غلط جوابات دیے ہیں۔

اے آئی اووروِیو نامی مصنوعی ذہانت جائزہ 14 مئی کو امریکہ میں شروع کیا گیا تھا۔ یہ جائزہ جملے پر مبنی سوالات کے جوابات دیتا ہے۔

نیویارک ٹائمز نے خبر دی ہے کہ اِس سرچ فیچر نے یہ سوال پوچھے جانے پر کہ پنیر کو پھسلنے سے کیسے روکا جائے، کچھ استعمال کنندگان کو ہدایت کی کہ وہ اپنے پیزا کی چٹنی میں غیر زہریلا گوند ملا دیں۔

اخبار کا یہ بھی کہنا ہے کہ AI اووروِیو نے دوسرے غلط جوابات بھی فراہم کیے۔ اُس نے بظاہر کہا کہ سابق امریکی صدر باراک اوباما مسلمان ہیں۔ وہ دراصل عیسائی ہیں۔

دیگر ذرائع ابلاغ نے ایک استعمال کنندہ کے بارے میں خبریں جاری کی ہیں، جس نے اے آئی اووروِیو سے پوچھا تھا کہ کیا اِسپاگیٹی کو تیزی سے پکانے کے لیے پٹرول کو استعمال کیا جا سکتا ہے۔ سرچ فیچر نے کہا کہ اِسپاگیٹی کو زیادہ تیزی سے پکانے کے لیے پٹرول کا استعمال نہیں کیا جا سکتا، لیکن یہ اِسپاگیٹی کو مصالحہ دار بنا سکتا ہے۔

گوگل نے این ایچ کے، کو بتایا ہے کہ بہت سے سوالات "عجیب و غریب" تھے۔ کمپنی نے یہ بھی کہا، "ہم بہتری کیلئے آراء کو سراہتے ہیں"۔

کمپنی ترجمان نے مزید کہا، "ہم مواد سے متعلقہ اپنی پالیسیوں کے تحت جہاں مناسب ہو فوری کاروائی کر رہے ہیں، اور اپنے نظاموں میں وسیع تر بہتری لانے کے لیے ان مثالوں کو استعمال کر رہے ہیں"۔