جنوبی کوریا، چین اور جاپان کا سربراہ اجلاس پیر کو سیئول میں ہو گا

جنوبی کوریا، چین اور جاپان کے رہنما پیر کو سیئول میں سہ فریقی سربراہ اجلاس منعقد کریں گے۔ یہ ساڑھے چار سال میں ایسا پہلا اجلاس ہو گا۔

جنوبی کوریا کے صدارتی دفتر نے جمعرات کے روز اعلان کیا کہ صدر یُون سون نیئول اتوار کو چینی وزیراعظم لی چیانگ اور جاپانی وزیراعظم کشیدا فومیو کے ساتھ دو طرفہ مذاکرات بھی کریں گے۔

صدارتی دفتر کے مطابق مذاکرات میں معیشت، عوامی سطح پر تبادلوں، ڈیجیٹل ٹیکنالوجی اور آفات کے وقت تعاون کے موضوعات شامل ہوں گے اور یہ کہ سربراہ اجلاس کے اختتام پر مشترکہ بیان متوقع ہے۔

اِن تینوں ایشیائی ممالک نے علاقائی تعاون کو فروغ دینے کے لیے ہر سال سربراہ اجلاس منعقد کرنے پر اتفاق کیا تھا جس کا آغاز سنہ 2008 سے ہوا تھا۔ لیکن یہ عمل جاپان اور جنوبی کوریا کے درمیان تنازعات اور کورونا وائرس کی عالمگیر وبا کے سبب رُک گیا تھا۔ آخری سہ فریقی سربراہ اجلاس دسمبر 2019 میں ہوا تھا۔

صدارتی دفتر نے کہا کہ سربراہ اجلاس سہ فریقی تعاون کے نظام کو مکمل طور پر بحال کرنے اور معمول پر لانے کے لیے ایک اہم سنگِ میل ثابت ہو گا۔