تائیوان کے قریب چینی فوج کی مشقیں

چینی فوج نے اعلان کیا ہے کہ اس نے جمعرات کی صبح تائیوان کے قریب فوجی مشقیں کی ہیں۔

چین کی ایسٹرن تھیٹر کمانڈ نے اعلان کیا کہ مقامی وقت کے مطابق صبح 7 بج کر 45 منٹ پر کِن مین جزیرے کے قریب اور دیگر علاقوں میں مشقوں کا آغاز ہوا۔

کمانڈ نے یہ بھی بتایا کہ فوجی مشقیں جمعرات اور جمعہ کے روز ہوں گی۔ چینی فوج، بحریہ، فضائیہ اور راکٹ فورسز مشقوں میں حصہ لے رہی ہیں۔

کمانڈ نے تائیوان کی آزادی کے خواہاں فریقین کو منتشر گروہ قرار دیا اور کہا کہ یہ مشقیں بیرونی قوتوں اور علیحدگی پسند گروہوں کی مداخلتی سرگرمیوں کے خلاف سخت انتباہ ہیں۔

تائیوان کی وزارت دفاع نے چین کے اعلان پر اظہارِ افسوس کرتے ہوئے کہا کہ یہ ایک بلا جواز اشتعال انگیزی اور ایسا عمل ہے جو خطے کے امن و استحکام کو تباہ کر دے گا۔

چینی فوج نے پہلے بھی اعلان کیا تھا کہ تائیوان کے ارد گرد مشقیں کی گئی ہیں۔ یہ اعلان اُس وقت کیا گیا تھا جب تائیوان کی سابق صدر تسائی اِنگ وین گزشتہ سال امریکہ میں تھیں اور جب موجودہ صدر ’لائی چِنگ تے‘ نے گزشتہ سال اگست میں تائیوان کے نائب صدر کی حیثیت سے امریکہ کا دورہ کیا تھا۔

چین تائیوان کی انتظامیہ پر دباؤ بڑھا رہا ہے۔ پیر کے روز عہدہ سنبھالنے والے صدر لائی نے کہا کہ وہ ’’ایک چین‘‘ کے اصول کو تسلیم نہیں کریں گے۔