روسی افواج کا یوکرینی علاقے خارکیف میں 12 بستیوں پر قبضہ

روس کی وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ اس کی افواج نے مشرقی یوکرین کے علاقے خارکیف کے شمالی حصے میں 12 بستیوں کا کنٹرول سنبھال لیا ہے۔

وزارت نے جمعہ کو اعلان کیا کہ اس کے فوجیوں نے گزشتہ ایک ہفتے کے دوران، ان بستیوں پر قبضہ کیا ہے۔ ماسکو شمالی خارکیف کے علاقے میں اپنی فوجی کارروائی تیز کر رہا ہے۔ یہ سلسلہ اس ماہ کے شروع میں روسی فوجیوں کے سرحد عبور کرنے کے وقت سے جاری ہے۔

روس، خارکیف شہر پر بھی حملے جاری رکھے ہوئے ہے، جو خطے کا دارالحکومت اور یوکرین کا دوسرا سب سے بڑا شہر ہے۔ ان حملوں میں وہ میزائل اور دیگر ہتھیاروں کا استعمال کر رہا ہے۔

تاہم روس کے صدر ولادیمیر پوٹن نے چین میں ایک نیوز کانفرنس میں کہا کہ وہ فی الحال اس شہر پر قبضے کا ارادہ نہیں رکھتے۔

پوٹن نے یہ بھی کہا کہ وہ سرحدی علاقوں میں ایک "سیکیورٹی بفر زون" بنانے کا ارادہ رکھتے ہیں کیونکہ ان مقامات سے یوکرین نے قریبی روسی بستیوں پر گولہ باری کر کے شہریوں کو ہلاک کیا۔

یوکرین کے کمانڈر انچیف اولیکسینڈر سیرسکی نے سوشل میڈیا پر پوسٹ کیا کہ خارکیف کے علاقے میں گھمسان کے معرکے ہونے والے ہیں جنکی دشمن تیاری کر رہا ہے۔