پوٹن اور شی جن پنگ کے مزید فوجی تعاون مشترکہ اعلامیے پر دستخط

روسی صدر ولادیمیر پوٹن اور چینی صدر شی جن پنگ نے ایک مشترکہ بیان پر دستخط کیے ہیں جس میں دوطرفہ فوجی تعاون میں پیشرفت کے منصوبے شامل ہیں۔

روسی رہنما نے چین کے سرکاری دورے کے دوران جمعرات کو بیجنگ میں صدر شی سے سربراہی مذاکرات کیے۔ پوٹن اس ماہ کے شروع میں اپنی پانچویں مدت صدارت کے آغاز کے بعد پہلے غیر ملکی دورے پر ہیں۔

بیان میں روس نے اس بات کا خیر مقدم کیا کہ یوکرینی بحران کے سیاسی اور سفارتی حل کے لیے چین تعمیری کردار ادا کرنے کو تیار ہے۔

بیان میں دونوں ممالک کے درمیان فوجی تعاون کو تقویت دینے کے حصے کے طور پر مشترکہ فوجی مشقوں کے پیمانے کو وسعت دینے کے منصوبے بھی شامل ہیں۔

بعد ازاں دونوں رہنماؤں نے ایک ساتھ چہل قدمی اور چائے نوشی کے دوران صرف مترجمین کی موجودگی میں غیر رسمی گفتگو کی۔

اطلاعات کے مطابق دونوں ممالک کے درمیان 4 گھنٹے سے زائد دورانیے کی غیر رسمی بات چیت ہوئی۔ یہ اس جانب اشارہ ہے کہ وہ مغربی ممالک پر نظر رکھتے ہوئے دوطرفہ تعلقات مضبوط کر رہے ہیں، جنکے یوکرین اور مشرقی ایشیا کے حالات پر روس اور چین سے اختلافات ہیں۔