سلواکیہ کے وزیراعظم گولی لگنے سے زخمی، ہسپتال میں زیر علاج

سلوواکیہ کے وزیراعظم رابرٹ فیکو کو ایک نامعلوم حملہ آور نے گولیوں سے نشانہ بنایا جس کے بعد انہیں ہسپتال لے جایا گیا ہے۔

فائرنگ کا واقعہ وسطی سلوواکیہ کے ہینڈ لووا میں پیش آیا۔ جناب فیکو ایک حکومتی اجلاس میں شرکت کے لئے بدھ کو وہاں کا دورہ کر رہے تھے۔

بی بی سی نے مقامی میڈیا کے حوالے سے خبر دی ہے کہ فیکو کو اس وقت گولی ماری گئی جب وہ اجلاس کے بعد ہجوم کے ساتھ مل رہے تھے۔

بتایا گیا ہے کہ فیکو کے پیٹ میں زخم آئے اور انہیں ہیلی کاپٹر کے ذریعے ہسپتال منتقل کیا گیا۔

اطلاعات کے مطابق مشتبہ شخص کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔

خبر رساں ادارے رائٹرز نے بھی جائے وقوعہ کی، فائرنگ کے فوراً بعد کی، ویڈیوز اور تصاویر جاری کی ہیں۔

فوٹیج میں ایک ایمبولینس کو دکھایا گیا ہے جس کے سائرن بج رہے ہیں اور جائے وقوعہ کو گھیرے میں لیا جا رہا ہے۔

ایک ویڈیو کلپ میں بظاہر جناب فیکو کی حفاظت پر مامور اہلکار ایک شخص کو کار میں دھکیلتے نظر آ رہے ہیں۔ ایک دوسری ویڈیو میں بظاہر پولیس اہلکار، شرٹ اور جینز پہنے ایک معمر آدمی کو حراست میں لے رہے ہیں۔

حزب اختلاف کی اپنی جماعت کو پارلیمانی انتخابات میں فتح سے ہمکنار کرانے کے بعد فیکو نے گزشتہ ستمبر میں اقتدار سنبھالا تھا۔ وہ یوکرین کو دی جانے والی فوجی امداد کو معطل کرنے کی اپیل کرتے رہے ہیں۔