اسرائیلی فوج کی جبالیہ میں زمینی کارروائی شروع، ہلاکتوں کی تعداد 35 ہزار سے متجاوز

اسرائیلی فوج نے غزہ کے شمالی شہر جبالیہ پر زمینی حملہ شروع کر دیا ہے جب کہ جنوبی شہر رفح میں بھی وہ حملے جاری رکھے ہوئے ہے۔ اسرائیل کی فوج کا کہنا ہے کہ اسلامی گروپ حماس جبالیہ میں دوبارہ منظم ہونے کی کوشش کر رہا ہے۔

اسرائیلی فوج نے اتوار کے روز کہا تھا کہ اس کی بّری فوج نے رفح میں حملوں کے دوران حماس کے 10 جنگجوؤں کو ہلاک کر دیا ہے۔

رفح میں دس لاکھ سے زیادہ بے گھر افراد پناہ لیے ہوئے ہیں۔

اقوام متحدہ کا تخمینہ ہے کہ تقریباً 3 لاکھ افراد رفح سے نقل مکانی کر چکے ہیں۔ اقوام متحدہ نے لڑائی روکنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ غزہ کی پٹی میں کوئی محفوظ جگہ نہیں ہے۔

اسرائیلی فوج نے قبل ازیں کہا تھا کہ اس نے جبالیہ پر کنٹرول حاصل کر لیا ہے۔ لیکن اس نے فضائی حملوں کے بعد وہاں زمینی آپریشن شروع کرنے کا اعلان کر دیا۔ فوج نے زور دے کر کہا کہ اس نے علاقے کے رہائشیوں کو وہاں سے نکل جانے کا کہہ دیا ہے۔

غزہ میں صحت حکام نے اتوار کے روز کہا کہ اسرائیل اور حماس کے درمیان تنازع شروع ہونے کے بعد سے غزہ میں مرنے والوں کی تعداد 35 ہزار 34 تک پہنچ گئی ہے۔