روسی فورسز کا مشرقی یوکرین کے خارکیف میں پانچ دیہات پر قبضے کا دعویٰ

روس کی وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ اس کی فورسز نے مشرقی یوکرین کے خارکیف علاقے میں پانچ سرحدی دیہات پر قبضہ کر لیا ہے۔

روسی بّری دستے شمال سے سرحد عبور کر کے جمعہ کے روز بڑے پیمانے پر گولہ باری کرتے ہوئے خارکِیف میں داخل ہوئے۔

خارکِیف کے گورنر اولیح سینیہوبوف نے ہفتے کے روز کہا تھا کہ شدید لڑائی نے تقریباً 2000 رہائشیوں کو نقل مکانی پر مجبور کر دیا ہے۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ یوکرین کی افواج نے روسی افواج کو پیش قدمی سے روک دیا تھا۔

یوکرین کے صدر وولودیمیر زیلنسکی نے جمعہ کے روز جاری کی گئی ایک ویڈیو میں کہا کہ ان کی حکومت خارکیف کی جانب مزید افواج بھیج رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ روسیوں کی جانب سے حملے کی کسی بھی کوشش کو ناکام بنایا جائے گا۔

یوکرینی فوج نے ہفتے کے روز کہا تھا کہ مشرقی علاقے دونیتسک اور دیگر مقامات پر روسی افواج کے خلاف شدید لڑائی جاری ہے۔

امریکی تھنک ٹینک انسٹی ٹیوٹ فار دی اسٹڈی آف وار، کی جمعہ کو جاری کردہ تجزیاتی رپورٹ کے مطابق "روسی افواج ممکنہ طور پر آنے والے دنوں میں شمالی خارکِیف میں جارحانہ کارروائیوں کو تیز کرنے کے لیے قدم جمانے کی اپنی حکمت عملی سے فائدہ اٹھائیں گی۔"