روس خارکیف میں جارحیت بڑھا سکتا ہے: امریکہ

امریکی حکومت کے ایک سینیئر اہلکار کا کہنا ہے کہ روسی افواج مشرقی یوکرین کے علاقے خارکیف میں بفر زون کے قیام کے مقصد سے اپنے حملوں میں شدت لا سکتی ہیں۔

علاقائی گورنر نے جمعے کے روز سوشل میڈیا پر کہا کہ روس کی سرحد کے قریب ایک علاقہ شدید گولہ باری کی زد میں آیا اور روسیوں نے شمالی خارکیف میں اپنے حملے کا ایک نیا محاذ کھول دیا ہے۔

یوکرینی فوج کے جنرل اسٹاف کے ایک اہلکار نے NHK کو بتایا کہ روسی بری دستے شمال سے سرحد عبور کر کے خارکیف میں داخل ہو گئے ہیں۔

اہلکار نے کہا کہ اس اقدام سے عندیہ ملتا ہے کہ روس کا مقصد سرحد کے ساتھ ایک بفر زون بنانا ہے تاکہ روسی علاقے میں یوکرین کی گولہ باری کو روکا جا سکے۔

دریں اثنا، وہائٹ ہاؤس کے قومی سلامتی کے ترجمان جان کربی نے جمعے کے روز صحافیوں سے امکان ظاہر کیا کہ روس آنے والے ہفتوں میں اپنی جارحیت کی شدت میں اضافہ کرے گا، اور یوکرین کی سرحد کے ساتھ بفر زون قائم کرنے کی کوشش میں اضافی فوجی بھیجے گا۔