نیتن یاہو رفح میں کارروائی آگے بڑھانے پر بضد

اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو کا کہنا ہے کہ "کسی بھی قسم کا دباؤ" اسرائیلیوں کو اپنا دفاع کرنے سے نہیں روک سکتا۔ انہوں نے یہ بیان امریکی صدر جو بائیڈن کی جانب سے اپنے ملک کو گولہ بارود کی ترسیل روکنے کے فیصلے کے تناظر میں دیا ہے۔ انہوں نے جمعرات کے روز کہا تھا کہ اگر اسرائیل کو "تنہا کھڑا ہونا پڑا" تو وہ ایسا کرے گا۔

نیتن یاہو اس بات سے باخبر ہیں کہ انکی فوج، رفح شہر کے کچھ حصوں پر بمباری میں اپنا گولا باردو تیزی سے خرچ کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ضرورت پڑنے پر وہ اپنے "ناخنوں" تک سے لڑیں گے۔

اسرائیلی مذاکرات کار قاہرہ میں جنگ بندی مذاکرات سے دستبردار ہو گئے ہیں۔ حماس کے رہنماؤں نے جمعرات کے روز ایک بیان جاری کیا جس میں کہا گیا ہے کہ ان کے مندوبین بھی واپس چلے گئے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ رفح پر حملے کا مقصد "ثالثوں کی کوششوں کو روکنا ہے"۔