وزیراعظم کشیدا شمالی کوریا سے سربراہی اجلاس کے خواہشمند

جاپانی وزیراعظم کشیدا فومیو کا کہنا ہے کہ وہ امریکہ اور عالمی برادری کے تعاون سے شمالی کوریا کے ساتھ سربراہی اجلاس کا انعقاد چاہتے ہیں۔

انہوں نے یہ بات شمالی کوریا کے ہاتھوں اغوا شدہ جاپانی شہریوں کے رشتہ داروں کے ایک گروپ سے جمعہ کو ٹوکیو میں ملاقات کے دوران کہی۔

اس گروپ نے حال ہی میں امریکہ کے دورے میں امریکی حکومت کے اعلیٰ عہدیداروں اور کانگریس کے دونوں ایوانوں کے ارکان سے ملاقات کی ہے تاکہ اغوا کے معاملے کے جلد از جلد حل کے لیے ان کی حمایت کی درخواست کی جائے۔

ملاقات میں مذکورہ گروپ کے سربراہ یوکوتا تاکُویا شامل تھے، جن کی بہن میگومی کو 13 سال کی عمر میں 1977 میں اغوا کیا گیا تھا۔ اسکے علاوہ اِیزُوکا کواِچیرو بھی گروپ کا حصہ تھے جنکی والدہ تاگُوچی یائےکو، اُس وقت اغوا کی گئیں تھیں، جب وہ صرف ایک سال کے تھے۔

ان رشتہ داروں نے کشیدا کو بتایا کہ امریکی حکام نے کہا ہے کہ وہ اغوا کے معاملے کو ہر موقع پر اٹھائیں گے۔

کشیدا نے کہا کہ جب انہوں نے گزشتہ ماہ امریکہ کا دورہ کیا تھا تو صدر جو بائیڈن نے اس مسئلے کو حل کرنے کی کوششوں کی بھرپور حمایت کا اظہار کیا تھا۔