اسرائیلی فوج نے رفح کراسنگ پر قبضہ کر لیا

دنیا بھر کی جانب سے زمینی کارروائی سے باز رہنے کے مطالبے کے باوجود اسرائیلی رہنماؤں نے جنوبی غزہ کے شہر رفح میں فوج بھیج دی ہے۔ منگل کے روز فورسز نے امداد کی ترسیل کے لیے اہم گزرگاہ کا کنٹرول سنبھال لیا۔

اسرائیلی وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو نے کہا ہے کہ اس راستے پر قبضہ ’’حماس کی باقی ماندہ فوجی قوت‘‘ کو تباہ کرنے کی جانب ایک’’بہت اہم قدم‘‘ ہے۔

جنگ بندی کی تازہ ترین تجویز پر نیتن یاہو نے کہا کہ یہ اسرائیل کی ’’بنیادی ضروریات‘‘ سے ’’بہت دور‘‘ ہے۔ انہوں نے اُن شرائط پر ’’ڈٹے رہنے‘‘ کیلئے ایک وفد قاہرہ بھیجا ہے۔

حماس کے رہنماؤں نے بھی اپنے نمائندے بھیجے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ رفح کراسنگ پر ’’قبضہ‘‘ ایک سنگین جرم ہے اور متنبہ کیا کہ اگر اس طرح کی ’’جارحیت‘‘ جاری رہی تو جنگ بندی کا کوئی معاہدہ نہیں ہوگا۔