جاپان میں کلاؤڈ کمپیوٹنگ میں توجہ 'ڈیٹا کی خودمختاری' پر

جاپان میں کلاؤڈ کمپیوٹنگ کے فراہم کنندگان "ڈیٹا خودمختاری" کے نام سے موسوم خدمات کی پیشکش کرتے ہوئے بہتر سیکیورٹی کے لیے صارفین کی مانگ کا جواب دے رہے ہیں۔

ڈیٹا کی خودمختاری سے مراد معلومات کو کسی ملک کی سرحدوں کے اندر رکھتے ہوئے مقامی قوانین اور ضوابط کے تحت محفوظ بنانا ہے۔

یورپی یونین اور کئی دوسرے ممالک ڈیٹا کی حفاظت کو بہتر بنانے کے لیے اس طرح کا طریقۂ کار اپنا رہے ہیں۔

فُوجِتسُو نے مالی سال 2025 میں کلاؤڈ کمپیوٹنگ سروس شروع کرنے کے لیے آئی ٹی کی بڑی امریکی کمپنی اوریکل کے ساتھ اشتراک کیا ہے۔ اس سروس کے تحت ڈیٹا ٹرانسفر اور اسٹوریج کو جاپان کے اندر رکھا جائے گا۔

حکام کا کہنا ہے کہ اس معاہدے کے تحت فُوجِتسُو کے مقامی ڈیٹا سینٹرز کے استعمال کو یقینی بنایا گیا ہے اور کسی بھی قسم کی معلومات کو سمندر پار منتقل نہیں کیا جائے گا۔

اس سے متعلقہ ایک پیشرفت میں، این ای سی اور این ٹی ٹی نے جاپانی کمپنیوں کو ایک سروس کی پیشکش کی ہے جس میں جنریٹو اے آئی استعمال کی جاتی ہے۔ اس سروس میں ڈیٹا سینٹرز کو استعمال کیے بغیر، اندرون ملک سرورز کے ذریعے ڈیٹا پراسیس کیا جاتا ہے۔

سروس فراہم کرنے والوں کے مطابق پراسیسنگ ایک مخصوص حد کے اندر رہتے ہوئے کی جا سکتی ہے لیکن یہ سروس ڈیٹا کی اندرونی اسٹوریج اور ٹرانسمیشن کے لیے کاروباری اداروں کی سیکیورٹی ضروریات پر پورا اترتی ہے۔