جنگ بندی تجویز سنجیدگی سے زیر غور ہے: حماس

اسلامی گروپ حماس کا کہنا ہے کہ اس کے رہنما، اسماعیل ہانیہ غزہ میں جنگ بندی کی تجویز کا مثبت انداز میں جائزہ لے رہے ہیں۔

جمعرات کو سوشل میڈیا پر جاری کیے جانے والے بیان میں حماس نے اعلان کیا کہ جناب اسماعیل ہانیہ نے مصری انٹیلی جنس کے سربراہ سے ٹیلیفون پر بات کی ہے۔

اسرائیل اور حماس کے درمیان غزہ کی پٹی میں جنگ بندی اور محصور علاقے میں قید بقیہ یرغمالیوں کی رہائی کے معاہدے کے لیے مصر ثالث کا کردار ادا کر رہا ہے۔

بیان کے مطابق ہانیہ نے مصر کو یقین دلایا ہے کہ حماس کا وفد عنقریب مصر کا دورہ کرے گا تاکہ ’’جاری مذاکرات کا عمل مکمل کیا جا سکے‘‘۔

تاہم ابھی تک یہ واضح نہیں کہ مذاکرات کا نتیجہ کیا ہو گا۔ اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو منصوبے کے مطابق رفح پر زمینی حملے کے لیے تیار دکھائی دیتے ہیں۔