زرمبادلہ منڈی میں جاپانی حکومت اور BOJ کی مداخلت کا شبہ

جاپانی وقت کے مطابق جمعرات کی صبح غیر ملکی زر مبادلہ منڈی میں جاپانی ین، ڈالر کے مقابلے میں 153 کی سطح تک مضبوط ہوا۔

سرمایہ کاروں کو شبہ ہے کہ غالباً جاپانی حکومت اور بینک آف جاپان، BOJ نے منڈی میں مداخلت کی ہے۔

جمعرات کی صبح 5 بجے کے فوراً بعد ین کی قدر میں تیزی سے اضافہ ہوا۔

منڈی کی توجہ، جاپان کے معیاری وقت کے مطابق بدھ کے روز ہونے والے امریکی فیڈرل ریزرو کے پالیسی اجلاس پر مرکوز رہی۔

اجلاس کے بعد ڈالر کے مقابلے میں جاپانی کرنسی کی قدر چار ین سے زیادہ کے اضافے کے ساتھ 153 ین فی ڈالر کی سطح پر آ گئی۔

ین کی قدر میں پیر کے روز بھی ایسی ہی بہتری آئی تھی۔ سرمایہ کاروں کے مطابق اس بات کا قوی امکان ہے کہ جاپانی حکومت اور BOJ نے اعلان کیے بغیر متعدد بار مداخلت کی ہے، جس کے باعث منڈی چوکس حالت میں ہے۔

جاپان کے کرنسی حکام نے اب تک کوئی باضابطہ اعلان نہیں کیا ہے۔

جاپان کے نائب وزیر خزانہ برائے بین الاقوامی امور کاندا ماساتو نے کہا کہ وہ کوئی تبصرہ نہیں کریں گے۔