جی سیون اعلامیہ جاری، کوئلے کی بجلی کا مرحلہ وار خاتمہ

جی سیون ممالک کے وزرائے توانائی نے 2030 کی دہائی کے پہلے پانچ سالوں کے دوران کوئلے سے بجلی کی پیداوار کو مرحلہ وار ختم کرنے پر اتفاق کیا ہے، جس میں خاتمے کا ایک متبادل ٹائم فریم بھی شامل ہے۔

وزراء نے منگل کے روز اٹلی کے شہر ٹُورین میں دو روزہ مذاکرات مکمل کیے۔

یہ اجلاس گزشتہ سال اقوام متحدہ کی موسمیاتی تبدیلی کانفرنس، کوپ 28 کے بعد ہوا ہے۔

اجلاس کے بعد جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ جی سیون ممالک 2030 کی دہائی کے وسط تک بجلی کی پیداوار میں کوئلے کا استعمال ختم کر دیں گے، ’’ یا ممالک کا نیٹ زیرو اخراج حاصل کرنے کے لیے درجہ حرارت میں ایک اعشاریہ پانچ ڈگری سینٹی گریڈ اضافے کی حد کو اپنی پہنچ میں رکھنے کی ٹائم لائن کے مطابق کام کریں گے‘‘َ۔

اس دستاویز میں دیگر ممالک پر بھی زور دیا گیا ہے کہ وہ اگلے سال کے اوائل تک سال 2030 اور اُس کے بعد کے لیے کاربن کی اخراج میں کمی کے نئے اہداف پیش کریں۔

اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ جی سیون کا ہدف 2030 تک قابل تجدید توانائی کی عالمی پیداواری صلاحیت کو تین گنا کرنا ہے۔ یہ بیٹریوں اور دیگر طریقوں کے ذریعے توانائی کے ذخیرے کو موجودہ سطح سے چھ گنا سے زیادہ بڑھا کر 1،500 گیگا واٹ کرنے کا ہدف مقرر کرتا ہے۔