جنوبی کوریا کی اپوزیشن کا متنازع جزائر کا دورہ

جنوبی کوریا کی مرکزی اپوزیشن جماعت کے مطابق اس کے قانون سازوں اور دیگر افراد نے بحیرہ جاپان میں واقع تاکے شیما جزائر کا دورہ کیا ہے۔

یہ جزائر جنوبی کوریا کے زیر انتظام ہیں۔ جاپان ان پر ملکیتی دعویٰ رکھتا ہے اور اُس کا موقف ہے کہ جنوبی کوریا نے ان جزائر پر غیر قانونی قبضہ کر رکھا ہے۔

ڈیموکریٹک پارٹی کی ایک علاقائی شاخ کا کہنا ہے کہ تین قانون سازوں سمیت 17 افراد منگل کو ان جزائر پر اترے ہیں۔ جنوبی کوریا ان جزائر کو توک تو کہتا ہے۔

یوٹیوب پر جاری کیے گئے ایک ویڈیو کلپ میں قانون سازوں کو بینر تھامے اور "توک تو ہمارا علاقہ ہے" کے نعرے لگاتے دکھایا گیا ہے۔

ان قانون سازوں نے مبینہ طور پر کہا ہے کہ یہ جزائر جنوبی کوریا کی سرزمین کا موروثی حصہ ہیں اور ان پر جاپان کا دعویٰ قطعی طور پر ناقابل قبول ہے۔

جاپان اور جنوبی کوریا کے تعلقات میں بہتری آنے کے باوجود، جنوبی کوریا کی حکومت ان جزائر کی ملکیت کی دعویدار ہے۔