رفح میں اسرائیلی فضائی حملوں میں کم از کم 22 افراد ہلاک: الجزیرہ

قطر میں قائم سیٹلائٹ ٹیلی ویژن الجزیرہ کا کہنا ہے کہ غزہ کے جنوبی شہر رفح میں اسرائیلی فضائی حملوں میں کم از کم 22 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

نشریاتی ادارے نے پیر کے روز اطلاع دی کہ اسرائیلی فوج نے شہر میں تین مکانات پر بمباری کی۔

اسرائیلی فورسز وہاں زمینی کارروائی شروع کرنے کی تیاریاں کر رہی ہیں۔

بین الاقوامی امدادی گروپ، ’’ورلڈ سینٹرل کچن‘‘ نے اتوار کے روز بتایا کہ وہ غزہ کی پٹی میں دوبارہ کام شروع کرے گا۔ اس گروپ نے رواں ماہ کے اوائل میں اسرائیلی فضائی حملے میں اپنے عملے کے سات ارکان کی ہلاکت کے بعد کارروائیاں معطل کر دی تھیں۔

گروپ نے کہا، ’’ہمیں یہ فیصلہ کرنے پر مجبور کیا گیا ہے: بھوک کے بدترین بحرانوں میں سے ایک کے دوران کھانا کھلانا بند کر دیں، یا یہ جانتے ہوئے کھانا کھلاتے رہیں کہ امداد، امدادی کارکنوں اور شہریوں کو ڈرایا اور مارا جا رہا ہے‘‘۔

گروپ کے مطابق اس کے پاس 276 ٹرک ہیں جن میں تقریبا 80 لاکھ کھانے ہیں اور وہ رفح کراسنگ سے داخل ہونے کے لیے تیار ہیں۔ یہ غزہ کو سمندر کے راستے خوراک پہنچانے کا بھی ارادہ رکھتا ہے۔

امریکی وزیرِ خارجہ انٹونی بلنکن غزہ میں جنگ بندی اور وہاں قید یرغمالیوں کی رہائی کے لیے جاری کوششوں پر تبادلۂ خیال کے لیے سعودی عرب پہنچ گئے ہیں۔