یوکرینی پاور پلانٹس پر روس اور روسی آئل ریفائنریز پر یوکرین کے حملے

یوکرین کی وزارتِ توانائی نے کہا ہے کہ روسی فوج نے مشرقی یوکرین میں دونِ پُروپیتروفسک اور دیگر علاقوں میں جمعہ کی رات دیر گئے سے ہفتے کی صبح تک توانائی کی تنصیبات پر گولہ باری کی، جس سے چار بجلی گھروں کو شدید نقصان پہنچا ہے۔

دریں اثناء یوکرینی فوج نے روس میں تیل صاف کرنے کے کارخانوں پر حملہ کیا ہے۔

روسی خبر رساں ادارے انٹرفیکس نے خبر دی ہے کہ یوکرین کے ڈرون حملے کے بعد ملک کے کراسنودار علاقے میں تیل صاف کرنے کے مرکز میں امور جزوی طور پر معطل کر دیئے گئے ہیں۔

یوکرین کے ذرائع ابلاغ کے ایک ادارے نے انٹیلی جنس ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ ملکی سیکیورٹی سروس نے یہ حملہ کیا۔

یوکرین پر جاری روسی فوجی حملے کے دوران، روس کے ایک آزاد خبر رساں ادارے ورستکا نے جمعرات کے روز خبر دی ہے کہ یوکرین میں لڑائی سے واپس آنے والے بہت سے فوجیوں نے پرتشدد جرائم کا ارتکاب کیا ہے۔

اس میں کہا گیا ہے کہ خبروں کی رپورٹوں اور مقدمات کے ریکارڈ سے عوامی معلومات کا موازنہ کیا گیا اور یہ کہ ایسے سابق فوجیوں نے گزشتہ دو سالوں کے دوران قتل کی 55 وارداتیں کیں، جن میں 76 افراد ہلاک ہوئے۔

ایک نجی فوجی کمپنی ویگنر گروپ کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ اس نے یوکرین کے خلاف جنگ میں لڑنے کے لیے قیدیوں کو یہ کہہ کر بھرتی کیا تھا کہ اگر وہ چھ ماہ تک لڑیں گے تو انہیں معاف کر دیا جائے گا۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ 44 مقتولین کو معافی یافتہ سابق قیدی فوجیوں نے قتل کیا۔