غزہ میں شدید گرمی کی لہر سے کم از کم دو بچے ہلاک

غزہ کی پٹی میں جاری، شدید گرمی کی لہر، پہلے سے ہولناک صورتحال میں رہنے والے 20 لاکھ سے زائد لوگوں کو متاثر کر رہی ہے، اور اس کی وجہ سے بچوں سمیت متعدد ہلاکتیں ہوئی ہیں۔

اونروا کے کمشنر جنرل فلپ لازارینی نے جمعہ کے روز ایک سوشل میڈیا پوسٹ میں لکھا کہ "گرمی کی وجہ سے کم از کم دو بچے ہلاک ہو گئے ہیں۔"

انہوں نے مزید کہا، "اب مزید کیا برداشت کرنا رہ گیا ہے: موت، بھوک، بیماری، نقل مکانی، اور اب شدید گرمی میں گرین ہاؤس جیسے ڈھانچوں میں رہنا۔"

لازارینی نے جنگ بندی کے اپنے مطالبے کا اعادہ کرتے ہوئے لکھا، "ہم اس مصیبت سے بڑھ کر ایک بڑے فوجی آپریشن کے متحمل نہیں ہو سکتے۔"

محصور علاقے میں صحت حکام کا کہنا ہے کہ تباہ کن تنازع شروع ہونے کے بعد سے چھ ماہ کے دوران 34 ہزار سے زیادہ افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

کئی میڈیا رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ حالیہ دنوں میں درجۂ حرارت 30 ڈگری سینٹی گریڈ کے قریب رہا ہے، جو سال کے اس وقت کے لیے معمول سے کافی زیادہ ہے۔