ارکانِ پارلیمان کے غیر جماعتی بنیاد پر قائم گروپ کا یاسُوکُونی عبادتگاہ کا دورہ

جاپانی قانون سازوں کے غیر جماعتی بنیاد پر قائم ایک گروپ نے ٹوکیو میں یاسُوکُونی عبادتگاہ کا اِس کے موسمِ بہار کے سالانہ تہوار کے موقع پر دورہ کیا ہے۔

یہ عبادتگاہ جاپان کے جنگ میں ہلاک ہونے والوں سے منسوب ہے، جن میں دوسری جنگِ عظیم کے بعد جنگی جرائم کے مجرم قرار دیے گئے رہنماء شامل ہیں۔

یہ گروپ ہر سال یاسُوکُونی عبادتگاہ کے موسمِ بہار اور موسمِ خزاں کے تہواروں کے دوران اور 15 اگست کو جاپان کے دوسری عالمی جنگ کے خاتمے کا یادگاری دن منانے کے موقع پر اس عبادتگاہ کا دورہ کرتا ہے۔

94 ارکانِ پارلیمان نے منگل کی صبح عبادتگاہ کے مرکزی ہال میں اپنی تعظیم کا نذرانہ پیش کیا۔ اِن میں مرکزی حکمراں جماعت، لبرل ڈیموکریٹک پارٹی کی جنرل کونسل کے چیئرپرسن موری یاما ہِیروشی، ایل ڈی پی کے دیگر اراکین، اور جاپان انوویشن پارٹی کے قانون ساز شامل تھے۔

وزیرِ اعظم کِشیدا فُومیو کی کابینہ سے شرکاء میں وزیرِ مملکت برائے معیشت، تجارت اور صنعت اِیواتا کازُوچِیکا اور پارلیمانی نائب وزیر برائے اُمورِ خارجہ فُوکازاوا یواِچی شامل تھے۔

گروپ کے ایک اعلیٰ رکن اور ایل ڈی پی پارلیمانی اُمور کے سابق سربراہ، آئِیساوا اِچِیرو نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ جاپان اگلے سال جنگ کے خاتمے کی 80 ویں برسی منائے گا۔

اُن کا کہنا تھا کہ اُنہوں نے آنے والی نسلوں تک جنگ کے سانحے اور امن کے نایاب پن کو پہنچانے کی اہمیت ذہن میں رکھتے ہوئے دعا کی۔