چین میں بحریہ کانفرنس سے قبل بحری جہازوں کی نمائش

چین نے ایک بین الاقوامی کانفرنس سے قبل پانچ سالوں میں پہلی بار اپنے چند بحری جہازوں کو غیر ملکی ذرائع ابلاغ کو دکھایا ہے۔ اس کانفرنس میں 29 ممالک کے اعلیٰ افسران شرکت کر رہے ہیں۔

چینی بحریہ نے غیر ملکی میڈیا کے نامہ نگاروں کو مشرقی بندرگاہی شہر چِنگ داؤ میں چار جنگی بحری جہازوں کو دیکھنے کی اجازت دی، جن میں تباہ کُن بحری جہاز اور رسد فراہم کرنے والا بحری جہاز شامل ہے۔ اسی شہر میں چین کے نارتھ سی فلیٹ کا صدر دفتر ہے ۔

بحریہ اتوار کے روز سے 19ویں ویسٹرن پیسیفک نیول سمپوزیم کی میزبانی چنگ داؤ میں کر رہی ہے۔

توقع کی جا رہی ہے کہ افسران سمندر میں ممکنہ حادثاتی تصادم سے متعلق قواعد و ضوابط پر تبادلۂ خیال کریں گے۔ کانفرنس کے موقع پر دو طرفہ ملاقاتیں بھی متوقع ہیں۔

چینی بحریہ کے ایک ترجمان نے ہفتے کے روز نامہ نگاروں کو بتایا کہ چین کثیرالجہتی پر عمل کرنے کے لیے تیار ہے اور بحری تحفظ سے متعلقہ خطرات کا مشترکہ طور پر جواب دینے کی خواہش رکھتا ہے۔

بہت سے ممالک جنوبی اور مشرقی بحیرۂ چین میں چین کی بحری سرگرمیوں سے تیزی سے محتاط ہوتے جا رہے ہیں۔ مبصرین کا کہنا ہے کہ چین بین الاقوامی تعاون کے لیے اپنی وابستگی پر زور دینے کا اعادہ کرتے ہوئے، اپنی بحری افواج کی مہارت کا مظاہرہ کر کے، ان ممالک کو اپنے دباؤ کے تحت رکھنے کا ارادہ رکھتا ہے۔