ڈینگی کی پھیلتی وبا سے خبردار کرنے کے لیے بنکاک میں ایونٹ

وسطی و جنوبی امریکہ اور ایشیا میں بھی ڈینگی بخار تیزی سے پھیل رہا ہے۔ جمعے کو بنکاک میں ایک ایونٹ کا انعقاد کیا گیا جس میں لوگوں پر زور دیا گیا کہ وہ مچھروں سے پھیلنے والی اس بیماری کے خلاف اقدامات کریں۔

اس نمائش کا انعقاد تھائی لینڈ کی وزارت صحت اور مچھروں کے خلاف اقدامات پر کام کرنے والی کمپنیوں نے کیا تھا۔ ڈینگی بخار کا مرض تیز بخار، سر درد اور پٹھوں اور جوڑوں کے درد کا باعث بنتا ہے۔ مرض سنگین ہو تو جان لیوا ہو سکتا ہے۔

جاپانی مصنوعات سازوں نے ایک بَگ اسپرے کی نمائش کی جس میں کیمیکل کیڑے مار دوا استعمال نہیں کی گئی بلکہ لیمن گراس کے عرق والے ڈائپر استعمال کیے گئے ہیں جس سے مچھر دور بھاگتے ہیں۔

تھائی لینڈ کے شعبہ برائے امراض کنٹرول کی ڈپٹی ڈائریکٹر نیتی ہیتنوراک نے لوگوں سے انفیکشن سے بچنے کے لیے کوششیں کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ بارش کے موسم میں ڈینگی بخار اگلے چار ماہ میں مزید پھیلنے کا خدشہ ہے۔